کوئٹہ اور تربت میں دہشتگردوں کی بزدلانہ کارروائیاں، ایف سی کے 3 جوان شہید

راولپنڈی: (کوہ نور نیوز) کوئٹہ اور تربت میں دہشتگردوں کیساتھ جھڑپ میں فرینٹئیر کور (ایف سی) کے 3 سپاہی وطن پر قربان جبکہ 5 زخمی ہو گئے ہیں۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق کوئٹہ کے علاقہ مرگرٹ میں دہشتگردوں نے سیکیورٹی پر مامور ایف سی جوانوں پر حملہ کیا، فائرنگ کے تبادلے میں ایف سی کے تین جوان شہید جبکہ ایک زخمی ہوا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق دوسرے واقعے میں دہشتگردوں نے پاک ایران سرحد پر گشت کرنے والے جوانوں پر حملہ کیا۔ اس حملے میں چار ایف سی جوان زخمی ہوئے۔ شہید ہونے والوں میں لانس نائیک سید حسین شاہ، سپاہی فیصل محمود، سپاہی نعمان الرحمان شامل ہیں۔ خیال رہے کہ 5 مئی کو شمالی وزیرستان میں دہشتگردوں کیخلاف آپریشن میں پاک فوج کے سپوتوں نے وطن کی خاطر اپنی جانیں قربان کر دی تھیں۔ فائرنگ کے تبادلے میں جوانمردی سے لڑتے ہوئے ایک کیپٹن اور دو جوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے شمالی وزیرستان کے علاقے ڈوسالی میں آپریشن کیا۔ فائرنگ کے تبادلے میں ایک افسر کیپٹن فہیم، سپاہی شفیع اور سپاہی نسیم شہید ہو گئے جبکہ دو دہشتگرد بھی مارے گئے۔ اس سے قبل پاک افغان بارڈر پر باڑ تنصیب میں مصروف ایف سی کے اہلکاروں پر سرحد پار سے دہشتگردوں نے حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں فرنٹیئر کانسٹیبلری کے حوالدار سمیت 4 جوان شہید جبکہ 6 زخمی ہو گئے تھے۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق افغانستان میں موجود دہشتگردوں نے بلوچستان کے ضلع ژوب کے علاقے مانزاکئی سیکٹر میں حملہ کیا۔ ایف سی کے جوان سرحد پر باڑ لگانے کے عمل میں مصروف تھے۔ ایف سی نے دہشتگردوں کی فائرنگ کا موثر انداز میں فوری جواب دیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق دہشتگردوں کے حملے میں ایف سی کے چار جوان شہید جبکہ چھ زخمی ہو گئے۔ شہید ہونے والوں میں حوالدار نور زمان، نائیک سلطان، سپاہی احسان اللہ اور سپاہی شکیل عباس شامل تھے۔