نئی پالیسی قبول نہ کرنیوالے صارفین کے ساتھ کیا ہوگا؟ واٹس ایپ کا اہم بیان جاری

لاہور: (کوہ نور نیوز) واٹس ایپ نے صارفین کیلئے ایک بیان جاری کیا ہے جس کے تحت اگر صارف نے نئی پرائیویسی پالیسی قبول نہیں کی تو 15 مئی کو ان کا اکاؤنٹ ڈیلیٹ نہیں کیا جائے گا۔واٹس ایپ نے اپنے حالیہ بیان میں وضاحت دیتے ہوئے بتایا ہے کہ پرائیویسی پالیسی نہ ماننے والے صارفین کا اکاؤنٹ فوری طور پر ڈیلیٹ نہیں کیا جائے گا۔ واٹس ایپ کا کہنا ہےکہ اگر کوئی صارف یہ پالیسی قبول نہیں کرے گا تو اسے بار بار نوٹیفکیشن بھیج کر یاد دہانی کروائی جائے گی کہ اگر وہ نئی شرائط قبول نہیں کریں گے تو ابتدائی طور پر وہ اپنی چیٹ لسٹ تک رسائی حاصل کرنے کے اہل نہیں ہوں گے۔ اتنا ہی نہیں بلکہ کچھ ہفتوں بعد پالیسی کو تسلیم نہ کرنے والے صارف کی واٹس ایپ سے کال کی سہولت بھی ختم کردی جائے گی جب کہ بعدازاں اس کا واٹس ایپ بند کر دیا جائے گا۔ کمپنی نے نئی شرائط کے نفاذ کیلئے تاحال کسی تاریخ کا اعلان نہیں کیا ہے۔ واضح رہے کچھ ماہ قبل واٹس ایپ نے صارفین کیلئے ایک نئی پرائیویسی پالیسی متعارف کروائی تھی جس کے تحت لوگوں کا ڈیٹا فیس بک کو شیئر کیا جانا تھا اور اگر کوئی صارف اس شرط کو قبول کرنے سے انکاری ہوتا تو اس کا واٹس ایپ فوری طور پر ڈیلیٹ ہو جاتا۔