پرائم منسٹر پورٹل پر شکایت، قصور میں کم سن بچیوں سے جسم فروشی کروانے والا گروہ پکڑا گیا، تہلکہ خیز انکشافات سامنے آگئے

قصور(کوہ نور نیوز )پرائم منسٹر پورٹل پر کی گئی شکایت پر پولیس اور چائلڈ پروٹیکشن بیورو نے مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے تین کمسن بچیوں کو بازیاب کرواکر ایک ملزم کو گرفتار کرلیا جبکہ دوسرا ملزم موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق قصور کے علاقہ پتوکی کے رہائشی افراد کی جانب سے کم سن بچیوں سے جسم فروشی کروانے کی شکایت پرائم منسٹر پورٹل پر کی گئی تھی۔ جس پر چئیر پرسن چائلڈ پروٹیکشن بیورو سارہ احمد نے فوری ایکشن لیتے ہوئے بچیوں کی بازیابی کے لیے سپیشل ٹیم تشکیل دی۔جس نے گزشتہ روز پولیس کے ہمراہ کارروائی کرتے ہوئے ریڈ لائٹ ایریا سےتین کم عمر بچیوں کو بازیاب کروا لیا ۔بازیاب کروائی گئی بچیوں کی عمریں سات سے نو سال کے درمیان ہیں ۔ سارہ احمد کے مطابق بچیوں کی خریدوفروخت میں ملوث ملزم عرفان کو گرفتار کر لیا گیا جبکہ دوسرا ملزم سمیر حیدر موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔ملزمان نے انکشاف کیا ہے کہ وہ شیر خوار بچیوں کو خریدتے ہیں اور ان کے بڑا ہونے پر ان سے جسم فروشی کا مکروہ دھندہ کرواتے ہیں۔اس سے قبل بھی پتوکی کے ریڈ لائٹ ایریا سےپانچ بچیوں کو بازیاب کروایا گیا تھا۔چائلڈ پروٹیکشن آفیسر احتشام کی تحریری درخواست پر ملزمان کے خلاف تھانہ سٹی پتوکی پولیس نے مقدمہ درج کر لیا ہے۔بازیاب کروائی تینوں بچیوں کو چائلڈ پروٹیکشن بیورو آفس لاہور منتقل کیا جا رہا ہے۔