وزیراعظم کے تعمیراتی صنعت کو دئیے گئے پیکیج میں کامیابی ملی ہے: ایف بی آر

اسلام آباد: (کوہ نور نیوز) فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے ترجمان کا کہنا ہےکہ وزیراعظم عمران خان کے تعمیراتی صنعت کو دئیے گئے پیکیج میں خاطر خواہ کامیابی ملی ہے۔ اسلام آباد سے جاری بیان میں ترجمان نے کہا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور نیا پاکستان ہاوسنگ ترقیاتی اتھارٹی نے عوام الناس اور تعمیراتی صنعت سے وابستہ سرمایہ داروں کو ایک مرتبہ پھر اس بات کی یا د دہانی کروائی ہے کہ وزیر اعظم کے بلڈرزاور ڈویلپرز کے لئے اعلان کردہ کنسٹرکشن پیکج میں قابل نمایاں کامیابی حاصل ہو رہی ہے۔ ادارے کی طرف سے جاری بیان کے مطابق یہ پیکیج انکم ٹیکس آرڈینینس 2001ء میں شق 100ڈی اور گیارویں شیڈول میں اضافہ کے ساتھ ٹیکس قوانین ترمیمی آرڈینینس 2020کے تحت نافذالعمل ہوا۔ کنسٹرکشن پیکج کا دائر ہ کار وسیع ہے جس کے تحت نہایت پرکشش ٹیکس رعایات حاصل ہو سکتی ہیں۔ یہ کنسٹرکشن پیکج لینڈ بلڈرز اور ڈویلپرز پر لاگو ہوتا ہے اور اس کے دائر ہ کار میں نئے اور موجودہ صنعتی اورترقیاتی پراجیکٹس دونوں آتے ہیں۔ بلڈرز اور ڈویلپرز رہائشی اور کمرشل تعمیرات پر ٹیکس کے فوائد حاصل کر سکتے ہیں۔ یہ فوائد افراد، ایسوسی ایشن آف پرسنز اور کمپنیوں کو بھی حاصل ہیں۔ اس پیکج کے تحت بلڈرز اور ڈویلپرزکے لئے ہر مربع فٹ اور مربع گز پر فکسڈ ٹیکس شرح کا اطلاق ہوگا۔پیکج کے تحت کم لاگت ہاوسنگ پراجیکٹس کی صورت میں ٹیکس میں نوے فیصد کمی حاصل ہو گی۔ کمپنیوں کے شئیر ہولڈرز کی سہولت کے لئے منافع آمدن پر کوئی ٹیکس لاگو نہیں ہو گا۔ پیکج کے تحت ودہولڈنگ ٹیکس میں بھی خاطر خواہ چھوٹ دی گئی ہے۔ سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لئے بلڈرز اور ڈویلپرز اور جائیداد کے خریداروں کے لئے شرائط کی تکمیل پر سرمایہ کاری کی آمدن پر کوئی پوچھ گچھ نہیں کی جائے گی۔ پیکج سے مستفید ہونے کا نہایت آسان طریقہ کار ہے ۔ بلڈرز اور ڈویلپرز کو 31 دسمبر 2020 تک ایف بی آر کے آئرس سافٹ وئیر پر رجسٹر ہونا پڑے گا۔ بلڈرز اور ڈویلپرز کو پراجیکٹ کی تکمیل کو 30 ستمبر 2022 تک یقینی بنانا پڑے گا۔ رجسٹریشن کے لئے بینک اکاونٹ ، ملکیتی کاغذات اور منظور پلان کی تفصیلات درکار ہوں گی۔ ایف بی آر کا سسٹم عارضی رجسٹریشن کی سہولت بھی دے رہا ہے۔ اس صورت میں جبکہ پراجیکٹس پلان کی منظوری پراسیس میں ہو۔ بلڈرز ، ڈویلپرز اور خریداروں کی سہولت کے لئے آن لائن سپورٹ فراہم کی جار ہی ہے۔ ایف بی آر کی ویب سائٹ پر نمایا ں بینرزاور ویب پیج تشکیل دیا گیا ہے۔ سوالات کے جوابات کے لئے مخصوص ای میل ایڈریس دیا گیا ہے اور رجسٹریشن سے متعلق مکمل راہ نمائی اپلوڈ کی گئی ہے۔ ا ب تک 57 کثرت سے کئے جانے والے سوالات کے جوابات دیئے جا چکے ہیں اور اپلوڈ کر دیئے گئے ہیں۔ کنسٹرکشن پیکج کی اخباروں اور الیکٹرانک میڈیا پر نمایاں تشہیر کی جا چکی ہےاور کئی ویبے نار سیشنز ایف بی آر اور نیا پاکستان ہاوسنگ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے اشتراک سے منعقد کئے جا چکے ہیں۔ بلڈرز، ڈویلپرز اور رئیل اسٹیٹ ایجنٹس کی ایسوسی ایشن کے ساتھ سیمینارز منعقد کئے جا چکے ہیں۔ اب تک 348 افراد نے 389 پراجیکٹس رجسٹرڈ کئے ہیں جن کی کل مالیت 157 ارب روپے ہے۔ جوں جوں آخری تاریخ قریب آرہی ہے رجسٹریشن میں اضافہ ہو رہا ہے۔