ایران کے ایٹمی پروگرام کےبانی کو قتل کر دیا گیا

تہران: (کوہ نور نیوز،ویب ڈیسک) ایران کے ایٹمی پروگرام کے بانی محسن فخری زادے کو تہران میں قتل کر دیا گیا ہے۔ ایرانی میڈیا کے مطابق محسن فخری زادے کو داامانڈ کے آبشار علاقے میں ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا،حملے کے بعد محسن فخری زادے کو ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ جانبر نہ ہوسکے۔ ایران کے سرکاری ٹی وی نے بھی اس ہلاکت کی تصدیق کی ہے تاہم دوسری طرف ایران کی جوہری توانائی تنظیم کے ترجمان بہروز کمل ونڈی نے ان خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام جوہری سائنسدان محفوظ ہیں۔ایرانی میڈیا کے مطابق ابھی تک کسی نے محسن فخری زادے کے قتل کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔ خیال رہےاسرائیلی حکومت نے 2010 اور 2012 کے درمیان چار ایرانی جوہری سائنس دانوں کو قتل کیا تھا۔ مغربی خفیہ ایجنسیوں کے مطابق ، دہشت گردی کی یہ حرکت اسرائیلی ایجنٹوں نے کی تھی ، اسرائیلی عہدے داروں نے کبھی بھی اس کی تردید نہیں کی۔ محسن فخری زادے امام حسین یونیورسٹی میں طبیعیات کے پروفیسر،ایرانی وزارت دفاع اور مسلح افواج لاجسٹک کے سینئر سائنس دان تھے۔