صوبہ پنجاب میں الیکٹرک رکشے اور گاڑیاں چلیں گی

لاہور: (کوہ نور نیوز) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کے زیر صدارت اجلاس میں اصولی اتفاق کیا گیا ہے کہ آلودگی کو کنٹرول کرنے کیلئے صوبے میں الیکٹرک رکشے اور گاڑیاں چلائی جائیں گی۔ اس کے علاوہ صوبے میں بائیو گیس پلانٹ بھی لگائے جائیں گے۔ گزشتہ روز وزیراعلیٰ آفس میں منعقدہ اعلیٰ سطح اجلاس میں صوبے میں سموگ سے نمٹنے کیلئے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی ہدایت پر پی ڈی ایم اے میں سموگ مانیٹرنگ سیل قائم کر دیا گیا۔ اجلاس میں 7نومبر سے صوبہ بھر میں روایتی بھٹہ خشت بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ زگ زیگ ٹیکنالوجی سے چلنے والے بھٹہ خشت چلتے رہیں گے۔ پنجاب بھر میں بائیو پلانٹ لگانے کا بھی فیصلہ ہوا اور پنجاب میں الیکٹرک رکشے اور گاڑیاں چلانے کی تجویزپر اصولی اتفاق کیا گیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا سموگ پر موثر طور پر قابو پانے کیلئے ڈپٹی کمشنرز کو ریلیف کمشنر کے اختیارات تفویض کر دیئے ہیں۔ ہر ضلع میں سموگ کنٹرول سینٹر قائم کیا گیا ہے جبکہ کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کے دفاتر میں فوکل پرسن مقرر کر دیئے ہیں۔ انہوں نے فیکٹریوں میں ٹائر جلانے پر پابندی پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنانے کی ہدایت کی اور کہا سموگ کے خاتمے کو یقینی بنانے کیلئے حکومت اور سول سوسائٹی کا اشتراک کار بے حد ضروری ہے۔ فصلوں کی باقیات کو جلانے پر پابندی پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے گا۔ سٹیل رولنگ انڈسٹریز کو ماحول دوست ٹیکنالوجی پر منتقل کیا جائے گا۔