معذور افراد کی آسانی کے لئے موبائل ایپ متعارف کروا دی گئی

اسلام آباد: (کوہ نور نیوز) وزارت انسانی حقوق نے معذور بچوں کی آسانی کے لئے موبائل ایپ متعارف کروا دی ہے۔ ڈاکٹر شیریں مزاری کا کہنا ہے کہ اس کی مدد سے 30 ہزار سے زائد خصوصی افراد کو تعلیمی، بحالی اور تکنیکی مہارت کے نظام میں شامل کرنے میں مدد ملے گی۔ شیریں مزاری نے کہا کہ اس ایپ کی مدد سے خصوصی افراد کو ڈائریکٹوریٹ جنرل آف سپیشل ایجوکیشن کے اداروں میں فراہم کی جانے والی فزیو تھراپی، سپیچ تھراپی، آکو پیشنل تھراپی، میڈیکل سہولیات اور مصنوعی اعضا کی فراہمی جیسی ہمہ جہت سہولیات سے متعلق معلومات فراہم ہوں گی۔ ان کا کہنا تھا کہ اس موبائل ایپلی کیشن کی مدد سے خصوصی افراد کو ڈائریکٹوریٹ جنرل آف سپیشل ایجوکیشن کے اداروں میں فراہم کی جانے والی تعلیمی، تربیتی اور بحالی کی سہولیات کے بارے میں آگاہی حاصل ہو گی اور اسلام آباد اور دور دراز علاقوں میں رہنے والے خصوصی افراد اور اُن کے انہوں نے کہا کہ اہل خانہ کو آن لائن داخلوں کی سہولت میسر آئے گی جس سے وہ باآسانی اپنی سہولت کے مطابق کوئی بھی سکول یا تربیتی ادارہ منتخب کر سکیں گے ۔یہ ایپلی کیشن باآسانی سمارٹ فون پر انسٹال کی جا سکتی ہے۔ وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ اس میں ڈائریکٹوریٹ جنرل آف سپیشل ایجوکیشن کے تمام ذیلی اداروں کے بارے میں بنیادی معلومات شامل کی گئی ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ اس میں ڈاون لوڈ اور آن لائن درخواست کے سٹیٹس کو بھی دیکھا جا سکتا ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل سپیشل ایجوکیشن شیخ اظہر سجاد نے کہا کہ یہ موبائل ایپلی کیشن ڈائریکٹوریٹ جنرل آف سپیشل ایجوکیشن نے نیشنل انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے تکنیکی تعاون سے تیار کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا ادارہ خصوصی افراد کواشتراکی تعلی، تکنیکی تعلیم اور بحا لی کی بلا امتیازسہولیات فراہم کر رہا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ یہ موبائل ایپلی کیشن خصوصی افراد، ان کے والدین اور اہل خانہ کے لیے انتہائی کارآمد ثابت ہو گی۔ تقریب میں وزارت انسانی حقوق اور انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے سینئر افسران نے شرکت کی۔ مہمانِ خصوصی نےموبائل ایپلی کیشن کے ایڈمنسٹریٹرز، ڈیزائنرز اور ڈیویلپرز میں تعریفی اسناد تقسیم کیں۔