ٹک ٹاک پر عائد پابندی کا خاتمہ، چین کی جانب سے پاکستان کا خیر مقدم

بیجنگ: (کوہ نور نیوز) ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹک ٹاک سے پابندی اٹھانے کے اقدام پر چین نے پاکستان کا شکریہ ادا کیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ہمیں خوشی کے دوستانہ مشاورت کے بعد یہ معاملہ حل کیا گیا۔ چینی وزارت خارجہ کے ترجمان زاؤ لیجیان کا میڈیا کو پریس بریفنگ میں کہنا تھا کہ ہم پاکستان کی جانب سے اس اقدام کو سراہتے ہیں۔ چینی حکومت کی جانب سے اپنے ملک کی کمپنیوں کو سختی سے ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ وہاں کے مقامی اور بین الاقوامی قوانین، رسم ورواج اور مذہبی عقائد کا احترام کریں۔ زاؤ لیجیان نے کہا ہے کہ ہمیں خوشی کے دوستانہ مشاورت کے بعد یہ معاملہ حل کیا گیا۔ خیال رہے کہ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے چین کی مشہور ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹک ٹاک کی انتظامیہ کی طرف سے یقین دہانی کے بعد اس پر عائد پابندی کو ہٹا لیا ہے۔ پی ٹی اے کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ ٹک ٹاک پر پابندی کئی سماجی حلقوں کی طرف سے ان شکایات کے بعد لگائی گئی تھی کہ اس کے بہت سے صارفین اسے فحاشی اور غیر اخلاقی مواد پھیلانے کے لیے استعمال کر رہے تھے۔ اپنے بیان میں کہا گیا کہ اس چینی ایپ کی انتظامیہ نے یقین دہانی کرائی ہے کہ پاکستان میں اس ایپ کے اپنی ویڈیوز کے ذریعے فحاشی پھیلانے کی بار بار کوشش کرنے والے اور غیر اخلاقی حرکات کے مرتکب صارفین کے اکاؤنٹ بند کر دیے جائیں گے اور اس ایپ کے ذریعے شیئر کیے جانے والے آن لائن مواد کو ملکی قوانین کے مطابق اعتدال پسندانہ بنایا جائے گا۔ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے تنبیہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر ٹک ٹاک کی انتظامیہ اپنی یقین دہانی کے باوجود اس کے مندرجات کو اعتدال پسندانہ اور غیر فحش بنانے میں ناکام رہی تو اس ویڈیو شیئرنگ پلیٹ فارم کو ملک میں مستقل طور پر ممنوع قرار دے دیا جائے گا۔