حکومت کا ناراض اتحادی جمہوری وطن پارٹی کو منانے کے لئے بڑا قدم

اسلام آباد: (کوہ نور نیوز) جج ارشد ملک نے قصور ہے۔ جج ارشد ملک کی برطرفی کےبعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے لیگی رہنما رانا ثنااللہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ جج ارشد بے قصور ہے۔ نوازشریف کے خلاف فیصلہ جج ارشد ملک کو مجبور کر کے کروایا گیا، ہماری مجبوری تھی کہ ہم اپنی بے گناہی ثابت کرنے کیلئے ان کی مجبورے سامنے لے کر آئے۔ بات کرتے ہوئے انہوں نے بتایا ہے کہ جب نوازشریف کے خلاف فیصلے دیئے جا رہے تھے تو جج ارشد ملک نوازشریف کے پاس آئے تھے اور انہوں نے بتایا تھا کہ مجھے کچھ لوگ آپ کے خلاف فیصلہ دینے پر مجبور کر رہے ہیں، رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ جج ارشد ملک نے اس وقت 2 اعلیٰ شخصیات کے نام لئے تھے جنہوں نے انہیں نوازشریف کے خلاف فیصلہ دینے پر مجبور کیا تھا۔