وفاقی دارالحکومت میں جدید فرانزک لیبارٹری کے قیام کا فیصلہ

اسلام آباد: (کوہ نور نیوز) وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں جدید فرانزک لیبارٹری کے قیام کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت عوام کو انصاف کی آسان اور فوری فراہمی کیلئے قانونی اصلاحات کا جائزہ اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وزیرقانون بیرسٹر فروغ نسیم نے موجودہ دورحکومت میں انصاف کے نظام میں کی جانے والی اصلاحات پر بریفنگ دی اور بتایا کہ سالہا سال سے التواء کا شکار رہنے والے مقدمات کی تکمیل کیلئے ایک وقت مقرر کردیا گیا ہے۔ بریفنگ میں کہا گیا ہے کہ متعلقہ قوانین میں اصلاحاتی عمل اورٹیکنالوجی کے استعمال سے نظام میں بہتری آئے گی۔ اجلاس میں وفاقی دارالحکومت میں جدید فرانزک لیبارٹری کے قیام کا فیصلہ کیا گیا۔ اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ موجودہ انصاف کے نظام میں پائے جانے والے سقم دور کرنا پی ٹی آئی کے منشور کا حصہ ہے کیونکہ انصاف کے موجودہ نظام پرعوام کا اعتماد بہت حد تک متزلزل ہوچکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انصاف کے نظام میں بہتری کیلئے عوام کی توقعات موجودہ حکومت سے وابستہ ہیں، موجودہ حکومت کی اولین ترجیح معاشرے کے کمزور، بے بس اور لاچار طبقات کی آواز بننا ہے۔ وزیراعظم نے فوجداری مقدمات کے نظام میں اصلاحات اور تھانہ کلچر میں تبدیلی لانے کی ہدایت کی اور کہا کہ مقدمات کے اندراج، تفتیش اور جیل خانہ جات میں اصلاحاتی عمل کے حوالے سے بھی روڈ میپ بنایا جائے۔ وزیراعظم نے وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم، مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان اور اٹارنی جنرل پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی۔ اس حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کمیٹی قانونی اصلاحات کے عمل کو آگے بڑھانے کیلئے ٹائم لائنز پرمبنی روڈ میپ تیار کرے،کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں آئندہ ہفتے اہم فیصلے کیے جائیں گے۔