مقبوضہ جموں و کشمیر میں فور جی موبائل انٹرنیٹ سروس جزوی بحال

لاہور : (کوہ نورنیوز) بھارت نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں فور جی موبائل انٹرنیٹ سروس جزوی بحال کر دی۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق قابض بھارتی انتظامیہ کی جانب سے جموں کے تمام اضلاع میں 4 جی موبائل انٹرنیٹ سروس جزوی بحال کی گئی ہے جب کہ مقبوضہ کشمیر کے اضلاع میں 4 جی موبائل انٹرنیٹ سروس تاحال بند ہے۔ واضح رہے کہ مقبوضہ وادی میں 7 ماہ سے زائد عرصے سے کرفیو نافذ ہے جس کے باعث کشمیری بنیادی ضروریات سے محروم ہوگئے ہیں جب کہ مواصلاتی نظام اور انٹرنیٹ کے استعمال پر بھی پابندی عائد ہے۔اس کے علاوہ بھارتی قابض انتظامیہ نے 19 فروری کو پراکسی سروس ورچوئل پرائیوٹ نیٹ ورک ( وی پی این) پر بھی پابندی عائد کردی تھی۔ سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ ابھی حقیقی چیلنج مقبوضہ کشمیر میں آرٹیکل 370 ، 35 اے کی واپسی اور حق خود ارادیت کا حصول ہے۔ بھارت کو یاسین ملک، آسیہ اندرابی، سید علی گیلانی سمیت ہزاروں سیاسی قیدیوں کو ہر صورت رہا کرنا ہو گا۔ کشمیر کی موجودہ صورتحال کا پس منظر بھارت نے 5 اگست 2019 کو راجیہ سبھا میں کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کا بل پیش کرنے سے قبل ہی صدارتی حکم نامے کے ذریعے کشمیر کی خصوصی حیثیت دینے والے آئین کے آرٹیکل آرٹیکل 370 کو ختم کردیا اور ساتھ ساتھ مقبوضہ کشمیر کو وفاق کے زیرِ انتظام دو حصوں یعنی (UNION TERRITORIES) میں تقسیم کر دیا جس کے تحت پہلا حصہ لداخ جب کہ دوسرا جموں اور کشمیر پر مشتمل ہوگا۔ بھارت نے یہ دونوں بل لوک سبھا سے بھی بھاری اکثریت کے ساتھ منظور کر الیے۔