رابی پیرزادہ اژدھے اور مگرمچھ رکھنے کے کیس میں بری

لاہور: (کوہ نورنیوز) رابی پیرزادہ کو گھر میں غیرقانونی طور جنگلی جانور رکھنے کے کیس میں بری کردیا گیا۔ محکہ تحفظ جنگلی حیات نے گزشتہ برس رابی پیرزادہ کے خلاف غیر قانونی طور پر اژدھے، سانپ اور مگر مچھ رکھنے کے الزام میں چالان درج کیاتھا۔ گزشتہ روز چالان کی سماعت مجسٹریٹ ماڈل ٹاؤن کی عدالت میں ہوئی، جج حارث صدیقی نے کیس کی سماعت کی۔ جج نے وکلا کے دلائل سننے کے بعد رابی پیرزادہ کے خلاف محکمہ وائلڈ لائف پنجاب کی جانب سے عائد کردہ تمام الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے رابی کو بری کرنے کا فیصلہ دیا۔کیس میں بری ہونے کے بعد رابی پیرزادہ نے انسٹاگرام پر کیس کا فیصلہ اپنے حق میں ہونے پر خدا کا شکر ادا کرتے ہوئے کہا اللہ نے مجھے وائلڈ لائف والے کیس میں سرخرو کرادیا۔ ویڈیو پیغام میں رابی پیرزادہ نے محکمہ وائلڈ لائف کو پیغام دیتے ہوئے کہا ہم فلمی ہیروئنز تھوڑی ہیں جو آپس میں لڑ رہے ہیں۔ رابی پیرزادہ نے محکمہ وائلڈ لائف کو ان کے ساتھ کام کرنے کی دعوت بھی دی اور کہا آئیں مل کر جنگلی حیات اور انسانوں کی دوستی کے لیے کام کرتے ہیں۔ رابی نے کہا اگر میں پرانی والی رابی ہوتی تو آپ کو چار باتیں سناتی اور کہتی کہ مودی کے لیے ویڈیو بنانے کی وجہ سے آپ نے مجھ پر کیس دائر کیا لیکن اب ایسا نہیں ہے جو بھی میں نے آپ سے پہلے کہا اس کے لیے میں معافی چاہتی ہوں۔ رابی پیرزادہ نے کہا میں وائلڈ لائف کے ساتھ مل کر جنگلی حیات کے تحفظ کے لیے مفت کام کرنا چاہتی ہوں آئیں مل کر کام کریں اور چیزوں کو بہتر کریں۔