قرآن کریم کو سیاسی معاملات میں نہ لایا جائے، چودھری شجاعت حسین

لاہور: (کوہ نور نیوز) قومی اسمبلی اجلاس میں رانا ثنا اللہ اور شہریار آفریدی کے درمیان ہونے والی چپقلش پر ردعمل دیتے ہوئے چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ سپیکر کو چاہیے کہ وہ اس بات کو ملحوظ خاطر رکھیں کہ کسی بھی حوالے سے یا کسی بھی طور پر قرآن پاک کے تقدس اور حرمت پر حرف نہ آئے۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ قومی اسمبلی میں قرآن مجید کو جس طرح موضوع بحث اور قرآنی آیات کو اپنے مقاصد کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے، وہ مناسب نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کل کو کسی بھی جانب سے قرآن مجید کو سیاسی معاملات کے بیچ میں نہ لایا جائے تاکہ اس مقدس ترین کتاب کی حرمت برقرار رہے۔ سپیکر قومی اسمبلی کو اس سلسلے میں سخت ترین اقدام سے بھی گریز نہیں کرنا چاہیے۔