عراق میں حکومت مخالف مظاہرین کیمپ پر حملہ، ہلاکتیں 24 ہو گئیں

عراق : (کوہ نور نیوز) عراق کے دارالحکومت بغداد میں حکومت مخالف مظاہرین کے کیمپ پر مسلح افراد کے حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 24 ہو گئی۔ بغداد میں السینک پُل کے قریب واقع عمارت میں مسلح افراد نے حکومت مخالف مظاہرین کے کیمپ پر جمعہ کی رات کو حملہ کیا تھا۔ عینی شاہدین کے مطابق مسلح افراد نے مظاہرین کو عمارت خالی کرنے کا کہا لیکن انکار پر پک اپ ٹرک میں سوار مسلح افراد نے عمارت پر دھاوا بول دیا جس نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور درجنوں زخمی بھی ہوئےتھے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اس حملے کے نتیجے میں ہلاکتوں کی تعداد 24 تک جا پہنچی ہے جب کہ زخمی ہونے والوں کی تعداد 130 کے قریب ہے۔یہ فوری طور پر واضح نہیں ہو سکا کہ مسلح افراد کا تعلق کسی سیاسی یا ملیشیا گروپ سے ہے تاہم پولیس حکام نے واقعے کی تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ واضح رہے کہ یکم اکتوبر سے بدعنوانی، بے روزگاری اور عوامی خدمات کی عدم دستیابی کے خلاف بغداد اور ملک کے جنوب میں ہلچل مچی ہوئی ہے۔ عراق کی سیکیورٹی فورسز کے کریک ڈاؤن میں اب تک 430 سے ​​زائد مظاہرین ہلاک اور ہزاروں افراد زخمی ہوئے ہیں۔ دو ماہ سے زائد پرتشدد مظاہروں کے بعد عراق کے وزیراعظم نے چند روز قبل مستعفی ہونے کا اعلان بھی کر دیا تھا لیکن اس کے باوجود عراق میں مظاہرے جاری ہیں۔