امریکا میں خون جما دینے والی سردی، درجہ حرارت منفی 17 تک گر گیا

نیویارک: (کوہ نور نیوز) امریکا کے کئی شہروں میں قطب شمالی سے چلنے والی برفیلی ہواؤں سے درجہ حرارت انتہائی کم ہوکر ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا جب کہ شدید سرد موسم کی وجہ سے اسکول بند اور کاروباری سرگرمیاں معطل ہوگئیں۔ برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق شدید سردی کا آغاز سائبیریا سے چلنے والی برفیلی ہواؤں سے ہوا جس سے امریکا کے کئی شہروں میں شدید برف باری ہوئی جہاں کنساس اور الینوئے میں روزانہ ریکارڈ برف باری دیکھنے میں آرہی ہے۔ امریکی محکمہ موسمیات کا کہنا ہےکہ رواں ہفتے ہونے والے شدید برف باری سے کئی ریکارڈ ٹوٹ سکتے ہیں۔ برطانوی میڈیا کا بتانا ہےکہ خراب موسم کے باعث اب تک 4 افراد جان سے جاچکے ہیں اور ایک ہزار سے زائد پروازیں بھی منسوخ ہوچکی ہیں جب کہ بعض علاقوں میں اسکولوں کو بند کردیا گیا ہے۔ امریکی محکمہ موسمیات کے مطابق خون جمادینے والی ہواؤں کا سلسلہ مشرقی ساحل کی جانب پھیل رہا ہے۔ منگل کے روز امریکا کے کئی شہروں میں گزشتہ سال کے مقابلے میں انتہائی کم درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا جہاں ریاست کنساس کی گارڈن سٹی میں درجہ حرارت منفی 17 ڈگری تک گر گیا جب کہ شکاگو میں 1986 کے بعد درجہ حرارت منفی 13 سے بھی نیچے گر گیا اور شہر میں پیر کے روز ریکارڈ برفباری بھی ہوئی۔ اس کے علاوہ میکسیکو کی سرحد پر ٹیکساس ٹاؤن میں بھی غیر معمولی برفباری ریکارڈ کی گئی۔ شدید سرد موسم کی وجہ سے اسکولز اور کاروباری مراکز منگل کے روز بھی بند رہے جب کہ سرد موسم نے سڑکوں کو بھی متاثر کیا ہے جس کی وجہ سے سڑک پر پھلسن کے باعث ٹرک بے قابو ہوگیا اور حادثے میں 8 سالہ بچی ہلاک ہوگئی۔ ریاست مشن گن میں بھی سڑکوں کی حالت خراب ہونے کی وجہ سے ٹریفک حادثے میں تین افراد ہلاک ہوئے۔