اضافی جی ایس ٹی کیخلاف ہڑتال پر لاہور اور کراچی کے تاجر تقسیم

لاہور: (کوہ نور نیوز) پنجاب حکومت اور پاکستان ٹریڈرز الائنس کے درمیان مذاکرات کامیاب ہوگئے جس کے بعد تاجر رہنماؤں نے 13 جولائی کو ہڑتال کی کال واپس لے لی جب کہ کراچی الیکٹرونکس ڈیلرز ایسوسی ایشن کل دُکانیں کاروبار بند رکھنے کے اعلان پر برقرار ہیں۔ ایوان وزیراعلیٰ لاہور میں پنجاب حکومت اور پاکستان ٹریڈرز الائنس کے درمیان 7 گھنٹے طویل مذاکرات ہوئے جس میں لاہور تاجربرادری ہفتے کی ہڑتال کے معاملے پر تقسیم دکھائی دی، مذاکرات کے بعد دو گروپس نے کل ہڑتال کی کال واپس لے لی۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرصنعت پنجاب میاں اسلم اقبال نے کہا کہ چند مفاد پرست سیاست دانوں کو ہڑتال کامیاب بنانے نہیں دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ تنظیمیں سوشل میڈیا پر منفی پروپیگینڈا کررہی ہیں، آئی ڈی کارڈ کی شرط صرف مین ڈیلر کے لیے ہے جب کہ گلی محلے میں کاروبار کرنے والے چھوٹے دکانداروں پر کوئی ٹیکس نہیں لگایا گیا۔ دوسری جانب کراچی الیکٹرونکس ڈیلرز ایسوسی ایشن نے کل دکانیں بند رکھنے کا اعلان کیا ہے اور فیصل آباد میں یکم جولائی سے پروسیسنگ انڈسٹری کی بندش کا برقرار ہے۔ قبائلی اضلاع میں بھی اسٹیل ملز یکم جولائی سے بند ہیں جس کے باعث 10 ہزار محنت کشوں کا روزگار متاثر ہوا ہے۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق ںے تاجر تنظیموں کی ملک گیر ہڑتال کی حمایت کا اعلان کردیا ہے۔یاد رہے کہ بجٹ میں سیلز ٹیکس میں اضافے کے خلاف ملک کےمختلف شہروں میں تاجروں کا احتجاج اور ہڑتال جاری ہے جب کہ آل پاکستان انجمن تاجران نے بھی 13 جولائی سے ملک بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کا اعلان کر رکھا ہے۔