لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کی ضمانت میں 28 مئی تک توسیع کردی

لاہور: (کوہ نور نیوز) ہائیکورٹ نے مختلف مقدمات میں مسلم لیگ (ن) کے رہنما حمزہ شہباز کی ضمانت میں توسیع کردی۔ مسلم لیگ (ن) کے رہنما حمزہ شہباز نے آمدن سے زیادہ اثاثہ جات ،صاف پانی اور رمضان شوگر ملز نالہ کیس سمیت دیگر کیسز میں ضمانت میں توسیع کی استدعا کی تھی۔ لاہور ہائیکورٹ میں حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی جس سلسلے میں لیگی رہنما عدالت میں پیش ہوئے۔ حمزہ شہباز کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ نیب کی جانب سے گرفتاری کی وجوہات نہیں بتائی جارہیں، اس پر نیب وکیل نے کہاکہ گرفتاری کی وجوہات بتا چکے ہیں، نیب کے حمزہ شہباز پر الزمات درست ہیں، ضمانت خارج کی جائے۔ عدالت نے دونوں وکلاء کے دلائل سننے کے بعد پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کی ضمانت میں 28 مئی تک توسیع کردی۔ دوسری جانب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حمزہ شہباز نے کہا کہ چیئرمین نیب کا انٹرویو حقیقت ہے تو بڑا شرمناک ہے، چیئرمین نیب نے پریس کانفرنس کرنی ہے تونیب سیاسی جماعت بنالے، نیب اپنی سیاسی جماعت کا نام نیب رکھے اور عمران نیازی سے الحاق کر لے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی روپیہ انتہائی نچلی سطح تک گر گیا، قوم سے جھوٹ بولا جا رہا ہے،یہاں کچھ ٹھیک نہیں ہو رہا، ملک معاشی طور پر کمزور ہوتے ہیں تو قومیں ڈوب جاتی ہیں، مجھے دور دور تک امید کی کرن نظر نہیں آتی۔