کابل میں غیر سرکاری تنظیم کے دفتر کے باہر دھماکا، 5 افراد ہلاک، 24 زخمی

کابل : (کوہ نور نیوز) افغانستان کے دارالحکومت کابل کے ضلع دشت اراچی میں غیر سرکاری تنظیم کے دفتر پر حملے کے نتیجے میں 5 افراد ہلاک اور 24 زخمی ہوگئے۔ افغان حکومت کے مطابق غیر سرکاری تنظیم کے دفتر کے باہر دروازے پر کھڑی بارود سے بھری ایک گاڑی میں دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں ایک خاتون اور پولیس اہلکار سمیت 5 افراد ہلاک جب کہ 24 زخمی ہوگئے۔افغان وزیر داخلہ کی ترجمان نصرت راحیمی کے مطابق حملے میں 4 حملہ آور بھی مارے گئے جو غیر سرکاری تنظیم کے دفتر میں افغان پولیس حکام کے پہنچنے سے قبل موجود تھے۔ دوسری جانب طالبان نے غیر سرکاری تنظیم کے دفتر کے باہر حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔ طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ٹوئٹر بیان کے ذریعے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ حملے میں 10 افراد کو ہلاک کیا گیا۔دوسری جانب افغان صدر اشرف غنی نے طالبان کے حملے پر اپنے ردعمل میں کہا کہ طالبان کا حملہ ناقابل معافی جرم ہے جو ظاہر کرتا ہے کہ وہ عوام کی امن کی خواہش کو خاطر نہیں لارہے۔ اشرف غنی کا مزید کہنا تھا کہ اگر طالبان عوام کی خواہشات کا احترام نہیں کریں گے تو انہیں کچل دیا جائے گا۔