کوئی غلط فہمی میں نہ رہے، تبدیلیاں ہوکر رہیں گی: احسان مانی

کوئٹہ: (کوہ نور نیوز) چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے اجلاس کے بعد کوئٹہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا خوشی ہے پی سی بی بورڈ کی کوئٹہ میں میٹنگ رکھی، بلوچستان میں کرکٹ کے فروغ کیلیے وزیر اعلیٰ سے ملاقات ہوئی، اجلاس میں ایجنڈے پر آئے تو 5 ارکان نے 6 نکاتی قرارداد پیش کی، ایم ڈی پی سی بی وسیم خان کی تعیناتی بورڈ آف گورنرز کا فیصلہ تھا۔ انہوں نے کہا ہم علاقائی سطح پر کرکٹ کو فروغ دینا چاہتے ہیں، کرکٹ میں اصلاحات کو کوئی نہیں روک سکتا، کوئی پی سی بی بورڈ کا اجلاس ہائی جیک نہیں کرسکتا۔ احسان مانی کا کہنا تھا بورڈ کے جو فیصلے پہلے ہوچکے وہ تبدیل نہیں ہوں گے، ہم نے شروع سے کہا ہے ہم کرکٹ کو بہتر کریں گے، کسی کو غلط فہمی نہیں ہونی چاہیے کہ ڈومیسٹک کرکٹ میں کوئی رکاوٹ آئے گی۔ ادھر ممبر بورڈ آف گورنر نعمان بٹ نے کہا ہے کہ ایم ڈی پی سی بی کی منظوری آج کے اجلاس میں ہونی تھی، پی سی بی کے آئین میں ایم ڈی کی کوئی گنجائش نہیں، بائیکاٹ نہیں کیا، اپنی قرارداد پاس کی ہے، 30 اپریل کو دوباہ اجلاس بلانے کا کہا ہے۔ نعمان بٹ کا کہنا تھا چیئرمین پی سی بی کے بیان پر افسوس ہوا، ان کو جھوٹ نہیں بولنا چاہیئے، ایم ڈی کی تنخواہ وزیراعظم سے زیادہ ہے، کرکٹ بورڈ کے آئین میں ایم ڈی کی گنجائش نہیں۔ انہوں نے کہا ہم نے گورننگ باڈی اجلاس کا بائیکاٹ نہیں کیا، ایجنڈے کو ہم نے اکثریت سے مسترد کر دیا، چیئرمین پی سی بی کا رویہ آمرانہ ہے۔