فلپائن: مسجد پر دستی بم حملے میں 2 افراد جاں بحق، 4 زخمی

منیلا: (کوہ نور نیوز) فلپائن کی مسجد میں دستی بم حملے کے نتیجے میں دو افراد جاں بحق اور 4 زخمی ہوگئے۔ فلپائن کے شہر زمبونگا کی ایک مسجد میں نامعلوم افراد مسجد پر دستی بم پھینک کر فرار ہوگئے جس کے نتیجے میں مسجد میں سوئے ہوئے 2 افراد جاں بحق اور 4 زخمی ہوگئے۔ زمبونگا کی علماء کونسل نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مسجد پر دستی بم حملے کو شیطانی، غیر منطقی اور غیر انسانی فعل ہے، شہری ایک دوسرے کی حفاظت کریں ۔ مقامی مذہبی رہنما موجیو ہاتامن کا کہنا ہے کہ مسجد پر حملہ غیراخلاقی فعل ہے، اس عمل کی کوئی توجیح پیش نہیں کی جاسکتی۔ دوسری جانب فلپائن کی فوج نے زمبونگا کے لوگوں کو اتحاد قائم رکھتے ہوئے شہریوں پر زور دیا کہ وہ سوشل میڈیا پر قیاس آرائیوں اور غلط معلومات پھیلانے سے باز رہیں۔ ریجنل ٹاسک فورس کے کمانڈر کرنل لیونل نیکولس نے کہا کہ مسجد پر دستی بم حملے کا تعلق تین روز پر چرچ پر ہونے والے دو بم دھماکوں سے نہیں ہے۔ یاد رہے کہ اتوار کے روز فلپائن کے صوبہ سولو کے علاقے جولو ٹاؤن میں ایک چرچ میں یکے بعدیگرے دو بم دھماکوں کے نتیجے میں 21 افراد ہلاک اور 100 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔