کیپ ٹاؤن ٹیسٹ: قومی ٹیم پہلی اننگز میں 177 رنز بنا کر آؤٹ

کیپ ٹاون:‌ (کوہ نور نیوز) کیپ ٹاؤن ٹیسٹ میں پاکستان کی بیٹنگ لائن ایک بار پھر فلاپ ہو گئی اور پوری ٹیم صرف 177 رنز پر پویلین لوٹ گئی۔ کپتان سرفراز 56 اور شان مسعود 44 رنز بنا کر نمایاں رہے۔ جنوبی افریقا نے ٹاس کی پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی، دوسرے ٹیسٹ میں بھی پاکستانی اوپنر ایک اچھا آغاز فراہم کرنے میں ناکام رہے اور 13 کے مجموعی اسکور پر فخر زمان اور امام الحق آؤٹ ہوکر پویلین لوٹ گئے۔ ٹیم کا اسکور جب 19 رنز ہوا تو تجربہ کار بیٹسمین اظہر علی 2 کے انفرادی اسکور پر اولیویئر کا شکار بنے، اسد شفیق نے کچھ مزاحمت کی مگر وہ بھی 20 رنز بنا کر ربادا کو اپنی وکٹ دے بیٹھے۔ بابر اعظم 2 رنز بنا کر آؤٹ ہونے والے پانچویں کھلاڑی بنے۔ یوں 54 رنز پر پاکستان کی آدھی ٹیم پویلین لوٹ چکی تھی، کپتان سرفراز اور شان مسعود نے چھٹی وکٹ کی پارٹنرشپ میں60 رنز جوڑے ، شان مسعود 44رنز بناکر پویلین لوٹ گئے، بعدازاں ساتوں وکٹ سرفراز احمد کی 156 رنز پر گری وہ 56 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، یاسر شاہ 5 اور محمد عباس صفر پر آؤٹ ہوئے، آخری آؤٹ ہونے والے کھلاڑی شاہین شاہ آفریدی تھے جو 177 کے مجموعی سکور پر صرف 3 رنز بنا کر ڈیل سٹین کا تیسرا شکار بنے۔ جنوبی افریقہ کی جانب سے اولیویئر نے چار ڈیل سٹین نے دو اور ربادا نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ دوسرے ٹیسٹ کے لیے پاکستان کی بیٹنگ لائن میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، تاہم فاسٹ بولر حسن علی کی جگہ محمد عباس کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے جبکہ جنوبی افریقا نے اسپنر مہا راج کی جگہ ایک اور فاسٹ بولر فلینڈر کو موقع دیا ہے۔ کپتان سرفراز احمد کا ٹاس ہارنے کے بعد کہنا تھا کہ اگر وہ ٹاس جیتنے میں کامیاب ہوتے تو پہلے بیٹنگ ہی کرتے۔ پاکستان نے آج تک جنوبی افریقا کی سرزمین پر کوئی سیریز نہیں جیتی اور کیپ ٹاؤن میں پاکستان کا ریکارڈ بھی کچھ اچھا نہیں، اس گراؤنڈ پر دونوں ٹیموں کے درمیان تین ٹیسٹ سیریز ہوئیں اور تینوں میں جنوبی افریقا نے پاکستان کو شکست دی۔