پاکستان میں عیدالفطر پر بھارتی فلموں کی نمائش پر پابندی میں نرمی

کراچی: (کوہ نور نیوز) عید الفطر کے موقع پر ملک بھر کے سینما گھروں میں بھارتی فلموں پر عائد دو ہفتوں کی پابندی میں نرمی کرکے ایک ہفتے کردی گئی ہے۔ گزشتہ ہفتے وزارت معلومات، براڈ کاسٹنگ، قومی، تاریخی و ثقافتی ورثہ نے پاکستان میں عید الفطر کے موقع پر بھارتی فلموں پر پابندی عائد کردی تھی، جس کے مطابق عید الفطر کے دوہفتے تک کسی بھی بھارتی فلم کو پاکستانی سینماؤں میں نمائش کی اجازت نہیں تھی، تاکہ پاکستانی فلمیں دوہفتے تک بزنس کرکے اپنی لاگت پوری کرسکیں۔ وزارت انفارمیشن کے اس فیصلے کو فنکار برادری کے ساتھ دیگر حلقوں کی جانب سے بے حد پزیرائی ملی تھی تاہم اب بھارتی فلموں کی نمائش پر عائد پابندی میں نرمی کرکے صرف ایک ہفتہ کردی گئی ہے جس کے تحت اب بھارتی فلمیں مقامی سینماؤں میں عید الفطر کے ایک ہفتے بعد ہی ریلیز کردی جائیں گی۔ چیئرمین سینٹرل بورڈ آف فلم سنسرز(سی بی ایف سی)دانیال گیلانی کاکہنا ہے کہ مقامی فلمی صنعت اور نمائش کی سہولیات کو دیکھتے ہوئے حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ عید الفطر اور عیدالضحیٰ کے موقع پر بھارتی فلموں کی نمائش کو ایک ہفتے تک محدود کیاجائے گا۔ ذرائع کے مطابق حکومت کی جانب سے عائد کی جانے والی پابندی میں ترمیم کچھ بااثر گروپ کی وجہ سے سامنے آئی ہے جو مقامی سینما انڈسٹری پر اثرانداز ہیں۔ یہ گروپ پاکستانی سینما پر بھارتی فلموں کی نمائش پر عائد پابندی میں نرمی کروانے کا ذمہ دار ہے۔ چیئرمین آف پاکستان فلم ڈسٹری بیوشن ایسوسی ایشن چوہدری اعجاز کامران نے کہا یہ نہایت طاقتور گروپ ہے، یہ لوگ نہیں جانتے ان کے اس اقدام سے مقامی فلمیں کتنی زیادہ اثر انداز ہوں گی جب کہ وہ ڈسٹری بیوٹرز جنہوں نے پاکستانی فلمیں خرید لی ہیں انہیں کتنی مشکلات پیش آئیں گی۔