پولیس کی رکاوٹوں کی وجہ سے مجھے ٹرک ڈرائیور بننا پڑا: علی زیدی

کراچی: (کوہ نورنیوز) تحریک انصاف کے رہنما علی زیدی کا کہنا ہے کہ سی ویو پر پولیس ہماری تیاری میں رکاوٹ ڈال رہی ہے جس کی وجہ سے مجھے ٹرک ڈرائیور بننا پڑا۔ پی ٹی آئی رہنما اور سابق وفاقی وزیر علی زیدی نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کل ہم نے تمام متعلقہ حکام سے سی ویو پراسکرین لگانے کی اجازت مانگی تھی ادھر دیگر پارٹیوں کے بھی پروگرام ہوتے ہیں لیکن صبح سے پولیس ہماری تیاریوں میں رکاوٹ ڈال رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کا رویہ مارشل لا کے دور میں بھی نہیں ہوا کیا امپورٹڈ حکومت مارشل لاسے بھی آگے نکل رہی ہے انہوں نے دفعہ 144 نافذ کی ہوئی ہے جو کہ انگریزوں کا قانون ہے۔ علی زیدی کا کہنا تھا کہ سندھ میں پولیس والے وردی پہن کر ٹھپے لگا رہے تھے،عمران ریاض پر ہر تھانے میں ایف آئی آر کاٹی جارہی ہے ایاز امیر پر حملہ کیا گیا یہ ملک کو کہاں لیکر جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت میں بھی ان سب نے مارچ کیے بلاول نے مارچ کیا جس میں ان کی کانپیں ٹانگ گئی تھیں انہوں نے صبح سے یہ تماشہ لگایا گیا ہے کہہ رہے ہیں اجازت نہیں ہے اجازت نامہ نہیں ہوتا صرف اطلاع دی جاتی ہے۔ علی زیدی نے کہا کہ سی ویو پر اسکریننگ ہوکر رہے گی اور عمران خان کی تقریر دکھائی جائے گی عوام سی ویو پر عمران خان کی تقریر سننے آئیں گے۔ واضح رہے کہ سی ویو پر پولیس نے ناکہ بندی کرکے ایک سڑک بند کردی ہے اور پی ٹی آئی کے اسپیکر لے جانے والے ٹرک کو روکنے کی کوشش کی گئی۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ پولیس نے ٹرک کے شیشے توڑ دیے اور پی ٹی آئی کے کارکنان کی دوسری گاڑی کو جانے نہیں دیا گیا۔