فیصل آباد: 12 سالہ بیٹی پر سوتیلی ماں اور باپ کا بدترین تشدد

فیصل آباد: (کوہ نورنیوز) فیصل آباد کے علاقے منصور آباد میں 12 سالہ زینب کو سوتیلی ماں اور حقیقی باپ کی جانب سے بیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا ،بچی کا ویڈیوبیان سامنے آنے کے بعد پولیس نے دو ملزمان کو گرفتار کر لیا۔ فیصل آباد کے علاقہ تھانہ منصور آباد کےعلاقے میں حقیقی باپ اور سوتیلی ماں نے بچی پر بیہمانہ تشدد کیا، 12سالہ بچی سوتیلی ماں کے بیہمانہ تشدد کے بعد جان بچاکر گھر سے بھاگ نکلی۔ متاثرہ بچی نے جان بچانے کے لیے ہمسایوں کے گھر میں پناہ لی۔ متاثرہ بچی نے اپنے ویڈیوبیان میں کہا کہ بچی کو سویاں کھانے پر بری طرح تشدد کا نشانہ بنایا گیا، تشدد کے باعث بچی کی آنکھ سوجن کی وجہ بند ہوگئی۔ ننھی بچی کے چہرے پر تشدد کے واضح نشانات موجود ہیں۔ زینب کے مطابق سوتیلی ماں اور آنٹی چارپائی سے باندھ کر تشدد کا نشانہ بناتی ہیں۔ سوتیلی ماں نےمیرے بھائی کو بھی متعدد بار تشدد کا نشانہ بنایا۔ بھائی گھر سے بھاگ جاتا تو اسے دوبارہ گھر واپس لاکر مارا جاتا۔ والدین میرے پیٹ میں ٹانگ مارتے تھے جس کے باعث میرے منہ سے خون آجاتا تھا۔ بچی کے ویڈیو بیان کے بعد پولیس حرکت میں آئی سی پی او کے حکم پر ایس ایچ او منصور آباد اور اینٹی ویمن ہراسمنٹ اینڈ وائلنس سیل نے فوری کارروائی کرتے ہوئے زینب کی سوتیلی ماں اور حقیقی باپ کو گرفتار کر لیا۔ سی پی او کی ہدایت پر ڈی ایس پی سرگودھا روڈ ننھی بچی کو علاج معالجہ کے لیے لے کر ہسپتال روانہ کر دیا گیا چائلڈ پروٹیکشن بیورو کا عملہ بھی ہسپتال پہنچ گیا سی پی او کے مطابق ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے سخت قانونی کاروائی کی جائے۔