میڈیکل کالج کی طالبہ نے گلے میں پھندا ڈال کر زندگی کا خاتمہ کرلیا

لاڑکانہ: (کوہ نورنیوز) چانڈکا میڈیکل کالج کی طالبہ نے ہاسٹل میں گلے میں پھندا ڈال کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔ اپنی مرضی سے خود کشی کرنے جارہی ہوں کسی کے پریشر میں خودکشی نہیں کررہی پولیس کو کمرے سے طالبہ کے ملنے والے خط کا متن سامنے آگیا طالبہ نے خود کشی کیوں کی وجہ سامنے نہ آسکی لاڑکانہ کے چانڈکا میڈیکل کالج کے ہاسٹل نمبر 2 میں ایم بی بی ایس کی 46 ویں بیچ کی طالبہ نوشین نے اپنے کمرے میں گلے میں پھندا ڈال کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا جبکہ ہاسٹل میں موجود طالبات نے دروازہ نہ کھولنے پر انتظامیہ کو بتایا جس پر دروازہ توڑنے پر نوشین کی پھندے سے لٹکتی لاش برآمد ہوئی۔ انتظامیہ نے پولیس کو بلایا جنہوں نے ہاسٹل کو سیل کرکے تحقیقات شروع کردی ہیں جبکہ ہاسٹل انتظامیہ کے مطابق ایم بی بی ایس فورتھ ائیر کی طالبہ نوشین کا تعلق دادو سے تھا اور ایک ہفتے بعد ان کے امتحانات تھے، نوشین اکیلے اپنے کمرے میں پڑھائی کے لیے موجود تھی جس نے خودکشی کی۔ انتظامیہ کے مطابق کمرے سے نوشین کا خط ملا ہے جس میں اس کا کہنا ہے کے وہ اپنی مرضی سے خود کشی کرنے جارہی ہے جبکہ طالبہ کے ورثا کو اطلاع دے دی گئی ہے جن کے آنے کے بعد لاش کو ان کے حوالے کیا جائے گا۔ دوسری جانب پولیس نے ہاسٹل کو سیل کردیا ہے اور شواہد اکھٹے کیے جارہے ہیں، پولیس کے مطابق فرانزک ٹیم کمرے سے شواہد اکٹھے کرچکی ہے ،نوشین کے خط کو بھی ہینڈ رائٹنگ ماہر سے چیک کروایا جائے گا جب کے پوسٹ مارٹم کے بعد لاش کو ورثا کے حوالے کیا جائے گا ،ورثا سے ملاقات کے بعد ہی تعین کیا جاسکے گا کے نوشین نے یہ انتہائی قدم کیوں اٹھایا۔